خاتون پولیس اہلکار کا گینگ ریپ،پولیس افسران ملوث

بھارت میں ظلم اور درندگی کی انتہا ہوگئی۔ نئی دہلی میں مسلمان خاتون پولیس اہلکار ریپ کے بعد بے دردی سے قتل کردی گئیں۔ صابیہ سیفی کو پہلے اغوا کیاگیا، پھر پچاس بار چاقو گھونپا گیا، گھناؤنے فعل میں پولیس کے اعلیٰ افسران بھی ملوث ہیں ۔

تاحال مقدمہ درج نہ کیا گیا، اہلخانہ انصاف کی دہائیاں دے رہے ہیں۔

بھارتی خاتون پولیس اہلکار جو دہلی کی سڑکوں پر خواتین کو تحفظ فراہم کرتی رہی۔ لیکن خود کو محفوط نہ رکھ سکی۔

صابیہ کو دلی سے اغوا کیا گیا اور لاش ہریانہ سے ملی لیکن مسلمان ہونا اتنا بڑا جرم بن گیا کہ پولیس اہلکار پر بیتے ظلم کا ایک ہفتے بعد بھی مقدمہ درج نہ ہوسکا۔

اہلخانہ کے مطابق اس گھناؤنے عمل میں پولیس کے اعلیٰ افسران بھی ملوث ہیں ۔

غم سے نڈھال صابیہ کے والدین نے ملزمان کو سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کردیا۔صابیہ نے چار ماہ قبل ہی پولیس میں شمولیت اختیار کی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *