Saturday , 25 January 2020

آزادی مارچ منزل پر پہنچ گیا ، مولانا کا شہر اقتدار میں دھرنے کا اعلان

اسلام آباد :حکومت گراؤمشن کے ساتھ جے ایو آئی (ف) کا آزادی مارچ اپنی منزل پر پہنچ گیا ، مولانا فضل الرحمان نے دھرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ”حکومت ناجائز ہے “یہ پیغام پوری دنیا تک پہنچائیں گے۔
تفصیلات کے مطابق مولانا فضل الرحمان کا آزادی مارچ اسلام آباد میں داخل ہو گیا، کئی کلومیٹر طویل جلوس آہستہ آہستہ جلسہ گاہ کی جانب بڑھ رہا ہے۔شہر اقتدار میں آزادی مارچ کی راہ میں جگہ جگہ کنٹینر کھڑے ہیں۔ ریڈ زون مکمل سیل ہے جبکہ اہم شاہراہوں پر اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔اسلام آباد کے سیکٹر ایچ نائن میں اتوار بازار کے قریب میدان میں پنڈال سجا ہے ۔ اے این پی ، ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے رہنما بھی جلسہ گاہ پہنچ گئے۔ پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو کا کچھ دیربعد جلسہ گاہ پہنچنے کا امکان ہے۔ شہبازشریف سمیت تمام جماعتوں کے قائدین جمعہ کے بعد جلسے سے خطاب کر یں گے ۔ جمعیت علماءاسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے دھرنا دینے کا اعلان کر دیا ، انہوں نے کہا کہ جلسہ بھی کریں گے۔”حکومت ناجائز ہے“ یہ پیغام پوری دنیا تک پہنچائیں گے۔ عوام کا یہ سمندر جعلی حکومت کو بہا لے جائے گا۔اس سے قبل گوجر خان سے اسلام آباد کی جانب روانہ ہوتے ہوئے شرکاءسے خطاب میں مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ آج کا جلسہ ملتوی نہیں کیا۔ لیاقت پور ٹرین حادثے پردکھ اور رنج ہے ،مارچ میں دھرنہ اور جلسہ بھی شامل ہے۔مسلم لیگ ن کو بتادیا ہے کہ جلسہ آج ہی ہوگا۔ مریم اورنگزیب کا جلسے سے کوئی تعلق نہیں ،جلسہ ہمارا ہے فیصلہ بھی ہمارا ہوگا ، جبکہ انہوں نے ٹرین حادثے کی اعلیٰ سطح پر تحقیقات کا مطالبہ بھی کیا۔دوسری جانب جی این این سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا کہ آج ٹی چوک میں ہونے والا اپوزیشن جماعتوں کا جلسہ ٹرین حادثے کے باعث کل تک ملتوی کردیا گیا ہے۔ شہباز شریف نے کہا کہ جلسہ کل جمعے کو ہوگا اور جلوس کے شرکاءآج کے بجائے کل اسلام آباد پہنچیں گے۔ کل جلسے میں شہباز شریف خود شامل ہوں گے اور آئندہ کالائحہ عمل دیں گے۔اس حوالے سے مسلم لیگ (ن) کے سکریٹری جنرل احسن اقبال نے کہا کہ وہ کل جمعہ کے بعد ریلی نکالیں گے۔ ٹرین حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر جلسہ موخر کیاگیا ہے۔تاہم پیپلز پارٹی نے اس فیصلے کے بارے میں لاتعلقی کا اظہار کیا ہے ،پیپلز پارٹی رہنما فرحت اللہ بابر کا کہنا ہے جلسہ ملتوی کرنے کا اعلان مولانا فضل الرحمٰن کو خود کرنا چاہئے تھا ۔ جلسے سے متعلق انہیں اعتماد میں نہیں لیاگیا ان کی پارٹی آج جلسے میں شرکت کرے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *