Saturday , 25 January 2020

اسلام آباد میں بچوں سے زیادتی، عریاں ویڈیو بنانے والےگروہ کا انکشاف

 اسلام آباد کے پوش سیکٹر ایف سکس میں پولیس اہلکار کی جانب سے بچوں سے زیادتی اور عریاں ویڈیو بنانے کا انکشاف ہوا ہے، والد کی درخواست پر مقدمہ درج کر لیا گیا، آئی جی نے اہلکار کو نوکری سے برطرف کر دیا۔

شہر اقتدار میں بچوں سے زیادتی کرنے والا گینگ بے نقاب، پانچ رکنی گروہ کا سرغنہ پولیس ہیڈ کانسٹیبل گرفتار کر لیا گیا۔ خبر چلنے پر ہیڈ کانسٹیبل نوکری سے فارغ، ویڈیوز برآمد کر لی گئیں۔ تھانہ آبپارہ میں ایک بچے کے والد کی درخواست پر مقدمہ درج کر لیا گیا۔ ایف آئی آر کے مطابق اسلام آباد پولیس کے شعبہ اے آر یو سکیورٹی ڈویژن میں تعینات ہیڈ کانسٹیبل شہزاد نے حبیب ستی، شاہ زیب ستی، ریحان سے مل کر چودہ سالہ بیٹے زین سے زیادتی کی اور غیر اخلاقی تصویریں اور ویڈیو بنائی۔ دنیا نیوز پر بچے سےمبینہ زیادتی کی خبر چلنے پر آئی جی اسلام آباد عامر ذوالفقار خان نے نوٹس لیتے ہوئے ہیڈ کانسٹیبل شہزاد کو نوکری سے برطرف کر دیا۔

دوسری طرف پولیس حکام اپنے پیٹی بند بھائی شہزاد کو بچانے کی کوشش کرنے لگے۔ ایف آئی آر میں صرف زیادتی کی دفعات لگائی گیں، الیکٹرانک کرائمز کو نظرانداز کر دیا گیا، ویڈیوز ملنے کا معاملہ دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *